Home Bhimber News Geo MUST VC

Geo MUST VC

152
SHARE

 

میرپور ( جیو پاک نیوز) میرپور یونیورسٹی آف سائنس اینڈ ٹیکنالوجی میں اختیارات کا ناجائز استعمال اپنے عروج پر
دوستو!
ایک طالبعلم کی ُدکھ بھری کہانی اور وی سی مسٹ کا ذاتی انتقام ۔ شرم کا مقام ہے۔
آج سے قریبا 5ماہ قبل ایم ایس سیشن 2017 کا انٹری ٹیسٹ لیا گیا۔ جس میں 80سے زائدطلباءموجود تھےجن میں سے پاس ہونے والے طلباء کی تعداد 3 بتائی گئی۔
لیکن مسٹ میں ایک روایت ہے کہ فیل ہونے والے طلباء کو بھی داخلہ دیا جاتا رہا اور بعض دفعہ تو ایسا ہوتا تھا کہ کسی منسٹر کے ساتھ اگر آپ کے تعلقات اچھے ہیں تو بغیر انٹری ٹیسٹ کے بھی آپ کو داخلہ مل سکتا ہے۔ 5 ماہ سے طلباء کو آج کل بتا کے ان کا وقت ضائع کروایا جاتا رہا اور 5 ماہ بعد پھر ایک مرتبہ طلباء کو دوبارہ ٹیسٹ دینے کے لئے بلاوایا گیااب کی بار 6 فروری کو 46 طلباء نے ٹیسٹ میں حصہ لیا
میں بھی ان 46 میں سے ایک تھا جو ٹیسٹ میں شامل ہوا۔ 35 نمبرات پر مشتمل ٹسیٹ میں سے میرے 23 نمبر آئےخدا خدا کر کے کفر ٹوٹااور میرٹ لسٹ بلاآخر 2 ہفتے بعد آویزاں کی گی جس میں میرٹ کی دھجیاں وائس چانسلر مسٹ کے کہنے پہ اڑائی گئی۔ میں #کنٹرول ڈیپارٹمنٹ میں نمبر 8 پے آرہا تھا میرا میرٹ56.7 فیصد بن رہا تھا لیکن میرا نام میرٹ لسٹ میں نہیں ڈالا گیا اور پوچھنے پے یہ بتایا گیا کہ ہم آپ کو داخلہ نہیں دینا چاہتے وائس چانسلر نہیں مان رہے۔ 
بھائی یہ ادارہ ہے کسی کی جاگیر نہیں کہ میرٹ پے آنے والے طلباء کو آپ یہ بولو کہ میری مرضی نہیں تو میں آپ کو داخلہ نہیں دیتا۔ اور اگر داخلہ نہیں بھی دینا تو آپ اس وقت بتاو جب میں اپنے ایڈمشن فارم جمع کرانے آیا۔ 5 مہینے ضائع کروانے کے بعد اور میرٹ پے آنے کے باوجود ایسا تو ہو نہیں سکتا کہ کسی صاحب کی اجازت نامے کا انتظار کیا جائے۔
میں پچھلے 2 ہفتوں سے مسلسل دفاتر کے چکر لگاتا رہا کہ بات چیت سے ہی مسئلے کا حل نکل آئے۔ لیکن ایسا نہ ہو سکا۔
اب میرے پاس اور کوئی حل نہیں احتجاج کے علاوہ۔ میں بروز سموار یونیورسٹی کے سامنے بھوک ہڑتالی کیمپ لگانے جا رہا ہوں۔
طالب علم دوستو!
آج اس موقع پر خاموشی کو اگر نہ توڑا گیا تو مستقبل میں بھی آنے والے ہزاروں طلباء کے ساتھ اسی طرح ناانصافی اور زیادتی کا یہ سلسلہ جاری رہے گااور یونیورسٹی میں بیٹھی کرپٹ انتظامیہ طلباء کے مستقبل کے ساتھ کھلواڑ کرتی رہے گی۔وقت کی نزاکت کو سمجھتے ہوے آئیے اور اس اجتجاج کو موثر بنا کر ہزاروں نئے آنے والے طلباء کے مستقبل کومحفوظ بنائیں ۔۔۔

Image may contain: text

SHARE