Home International News Geo VC MUST

Geo VC MUST

31
SHARE

میرپور(جیو پاک نیوز  )مسلم یوتھ ونگ ضلع میرپورکے سابق صدرراجہ قیصرشہزادنے کہاہے کہ وائس چانسلر میرپور یورسٹی آف سائنس اینڈ ٹیکنالوجی راجہ حبیب الرحمن کے کنٹریکٹ میں توسیع تعلیم دشمن اقدام ہے راجہ حبیب الرحمن ایک کرپٹ اوربدترین شخص ہے جس نے یونیورسٹی کواپنی جاگیربنالیاہے راجہ حبیب الرحمن نے اقرباپروری کی بدترین مثال قائم کی ہے ،حکومت فوری طور پر کرپٹ وی سی کو عہدے سے بر طرف کرکے اس کے خلاف سنگین الزامات کی تحقیقات کرے،صدرآزادکشمیرنے کرپٹ وی سی کے کنٹریکٹ میں توسیع دے کربدترین مثال قائم کی ہے ان خیالات کااظہارانہوں نے خصوصی انٹرویودیتے ہوئے کیا راجہ قیصرشہزادنے کہاکہ اعلی عدلیہ میرپور یونیورسٹی جیسے مقدس تعلیمی ادارے کو کرپٹ وی سی سے بچانے کیلئے اپنا کردار اداکرے۔انہوں نے کہا کہ وی سی کی حمایت کرنیوالے تمام چہرے بے نقاب کیے جائیں گے جنہوں نے بہتی گنگا میں ہاتھ دھوئے اور کرپٹ وی سی کی سپورٹ کرکے اسکی مدت ملازمت میں توسیع کیلئے اپنا کرداراداکیاحکومت فوری طور پر کرپٹ وی سی کو عہدے سے بر طرف کرکے اس کے خلاف سنگین الزامات کی تحقیقات کرے ۔حکومت کی کرپٹ وی سی کے خلاف کاروائی سے معنی خیزخاموشی درپردہ کرپٹ افراد اور کرپشن کی کھلم کھلا حمایت کے مترادف ہے  انہوں نے ایک سوال کے جواب میں کہاکہ  وائس چانسلر نے اپنی بیوی ،بیٹیوں اور دامادوں کو غیرقانونی طریقے سے یونیورسٹی میں بھرتی کیا بلکہ ان کی خاطر ڈیمپارٹمنٹس بھی قائم کیے گئے انہوں نے کہا کہ وائس چانسلر نے نا صرف اپنا پورا ٹبر بھرتی کیا بلکہ اپنے آبائی علاقے گلی محلے کا بھی کوئی فرد نہ چھوڑا جس میں انہوں نے ریوڑیوں کی طرح عہدے نہیں بانٹے لیکن حیرانگی ہے کہ حکومت ،صدرریاست اور چیف سیکرٹری متعلقہ ادارے سالہاسال سے خاموش ہیں کیا حکومت کو اس کرپٹ وائس چانسلر کے علاوہ پوری آزادریاست میں ایک بھی اہل شخص نہیں ملا ۔انہوں نے کہاکہ ایک طرف حکومت کرپشن کے خلاف بیانات دیتی ہے لیکن عملی طور پر حکومت اور صدر ریاست کرپٹ وائس چانسلر راجہ حبیب الرحمن کو مکمل سپورٹ کررہے ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ صدرریاست مسٹ یونیورسٹی کے چانسلر تھے انہیں چاہیے تھا کہ وہ سرٹیفائیڈ کرپٹ وائس چانسلر راجہ حبیب الرحمن کے خلاف ایکشن لیتے لیکن انہوں نے کرپٹ وی سی کا احتساب کرنے کی بجائے اسے مکمل آشیرباد فراہم کی ہے ۔کیا تعلیمی ادارے اب حکومت کی نگرانی میں تباہ کیے جائیں گے؟ ۔راجہ قیصرشہزادنے کہاکہ  کرپٹ وائس چانسلر کی اقرباپروری ،میرٹ کی پامالی ، مالی کرپشن،اختیارات کے ناجائز استعمال کے حوالے سے احتساب بیورو میں دائر ریفرنسز میں کرپٹ وی سی کے خلاف ٹھوس شواہد کے ساتھ اس کے خلاف فیصلہ جات آچکے ہیں اس کے باوجود صدر ریاست کی خاموشی اور اپنی بغل میںکرپٹ وی سی کو کرپشن کے لئے گرین سگنل دینا میرٹ کا قتل عام اور ریاست کے ساتھ دشمنی کی بدترین مثال ہے ۔ آج ریاست میں میرٹ پرآنے والے ڈگریاں رکھنے والے اہل نوجوان دربدر کے دھکے کھا رہے ہیں اور کرپٹ افراد اعلی عہدوں پر برجمان ہیں سارے مافیاکا گٹھ جوڑ اب مزید برداشت نہیںکیا جائیگا ۔

SHARE